12

لیموں اور کوئلہ کھانے والا شخص

ریو ڈی جنیرو: برازیل میں ایک دور افتادہ جزیرے پر پھنس جانے والے ایک باغبان نے پانچ روز تک صرف لیموں، کوئلے کے چورے اور سمندری پانی پر گزارا کرکے اپنی جان بچائی جس پر خود ماہرین بھی حیران ہیں۔

شہری نیلسن نیڈی کو رواں ہفتے ایک اور شخص جیٹ اسکیئر نے اس وقت شناخت کیا جب وہ اپنی ٹی شرٹ لہرا کر اشارہ کررہے تھے کیونکہ 51 سالہ شخص اپنی موت کے قریب جاپہنچا تھا۔

انہیں معمولی چوٹیں بھی آئی تھیں اور انہیں فوری طور پر ہسپتال لے جایا گیا جہاں ان کی صحت قدرے بہتر ہے۔ وہ ریوڈی جنیرو کے مشہور گروماری ساحل پر گئے جہاں انہیں کچھ کام تھا۔ وہ ایک پتھر پر بیٹھے تھے کہ ایک تیز لہر نے انہیں گرادیا اور پانی انہیں دو میل دور تک لے گیا۔
وہ اصل مقام کی بجائے پالما جزیرے پر اترے جہاں کوئی انسان نہ تھا، نہ وہاں درخت تھا اور نہ ہی کوئی کھانے کی شے تھی یہاں تک چھپنے کو بھی کوئی جگہ نہ تھی۔ پھر انہیں ایک غار نما جگہ ملی جہاں وہ چھپ گئے۔ بھوک لگنے کے بعد انہیں بہت تلاش کے بعد دو عدد لیموں اور پانی کی چند بوتلیں ملیں جو کوئی ماہی گیر چھوڑ گیا تھا۔

انہوں نے چھلکوں سمیت لیموں کھائے۔ اس کے بعد دوبارہ وہ گرماری جزیرے کی جانب تیرنے لگے لیکن سمندری لہروں سے آدھے راستے تک ہی پہنچ سکے۔ وہ دوبارہ پالما جزیرے پہنچے جہاں انہوں ںے چلے ہوئے کوئلے راکھ بھی کھائی۔

اس طرح پانچویں روز جیٹ اسکی کرتے دو افراد نے انہیں دیکھ لیا اور ہسپتال پہنچایا جہاں انہیں غذا اور طبی امداد دے کر جان بچالی گئی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں